فلسطینیوں کی اکثریت 7 اکتوبر کے حملوں کی حامی، حماس کی مقبولیت میں اضافہ ہوگیا: سروے

غزہ(نیوز ڈیسک) فلسطین میں ہونے والے ایک سروے کے مطابق فلسطینیوں کی اکثریت نے 7 اکتوبر کو حماس کی جانب سے اسرائیل پر حملوں کی حمایت کی ہے۔

گزشتہ دو مہینوں سے زائد عرصے سے غزہ پر جاری مسلسل اور شدید حملوں کے باوجود اسرائیل حماس کو نہ صرف عسکری حوالے سےکوئی بڑا نقصان پہنچانے میں ناکام رہا ہے بلکہ اس دوران حماس کی مقبولیت میں مزید اضافہ ہوگیا ہے۔

غیر ملکی خبر ایجنسی کے مطابق سروے کے حوالے سے معروف فلسطینی ادارے فلسطینی سینٹر فار پالیسی سروے اینڈ ریسرچ (PCPSR) کے حالیہ سروے نتائج میں یہ سامنے آیا ہےکہ غزہ اور مقبوضہ مغربی کنارے میں موجود ہر 4 میں سے 3 فلسطینی 7 اکتوبر کو اسرائیل کے خلاف کی جانے والی حماس کی کارروائی کو درست سمجھتے ہیں۔

سروے نتائج کے مطابق 7 اکتوبر کے بعد غزہ کی پٹی کے ساتھ مقبوضہ مغربی کنارے میں بھی حماس کی مقبولیت میں اضافہ ہوا ہے۔

سروے میں 72 فیصد فلسطینیوں نے حماس کے حملوں کو درست قرار دیا جب کہ 22 فیصد افراد نے اس کی مخالفت بھی کی جب کہ باقی 6 فیصد افراد نے اس کا کوئی جواب نہیں دیا۔

سروے کے دوران فلسطینیوں کی اکثریت نے حماس کے اس دعوے کو قبول کیا کہ یہ کارروائی مسجد اقصیٰ کے تحفظ اور اسرائیلی قید میں موجود فلسطینیوں کی رہائی کے لیے ہے، 10 فیصد افراد نے حماس کی کارروائی کی مخالفت بھی کی اور اسے جنگی جرائم کا مرتکب قرار دیا۔

سروے میں یہ بات بھی سامنے آئی کہ 7 اکتوبر سے قبل ہونے والے سرویز کے مقابلے میں اس مرتبہ غزہ میں حماس کی حمایت میں اضافہ دیکھنے میں آیا جب کہ مقبوضہ مغربی کنارے میں حماس کی مقبولیت 3 گناہ بڑھ گئی جہاں کافی سالوں بعد تشدد کے واقعات اور تناؤ میں اضافہ دیکھنے میں آرہا ہے۔

سروے کے مطابق فلسطینی اتھارٹی کے صدر محمود عباس کی مقبولیت انتہائی کم سطح پر آچکی ہے اور سروے میں صرف 11 فیصد افراد نے محمود عباس کی قیادت پر اطمینان کا اظہار کیا اور 89 فیصد افراد نے ان سے استعفے کا مطالبہ کیا ہے۔

خبرایجنسی کے مطابق یہ سروے 22 نومبر سے 2 دسمبر کے دوران کیا گیا، اس دوران غزہ میں عارضی جنگ بندی کے باعث سروے کرنا ممکن ہوسکا۔

مزید پڑھیں: غزہ میں مزید 10 اسرائیلی فوجی ہلاک؛ 2 یرغمالی فوجیوں کی لاشیں بھی برآمد

خیال رہے کہ7 اکتوبر سے جاری اسرائیلی حملوں میں غزہ میں 19 ہزار 400 فلسطینی شہید ہوچکے ہیں جب کہ 50 ہزار کے قریب زخمی ہیں، شہدا اور زخمیوں کی بڑی تعداد خواتین اور بچوں کی ہے۔

تازہ ترین

June 24, 2024

امریکن بزنس کونسل کے وفد کی جان لیوٹن کی قیادت میں وفاقی وزیر عبدالعلیم خان سے ملاقات

June 24, 2024

وزیراعظم پاکستان کی ہدایت پر وفاقی وزیر احسن اقبال کی زیر صدارت اس دورے سے بھرپور استفادہ کرنے کے لئے اہم اجلاس

June 24, 2024

جماعت اہل سنت پاکستان و جماعت رضائے مصطفی پاکستان کے وفد نے حافظ محمد رفیق قادری ناظم اعلی جماعت اور دیگر سے ملاقات کی

June 24, 2024

ممتاز علمی و روحانی شخصیت مفتی ابوداد محمد صادق رضوی رحمتہ اللہ علیہ کے 9ویں سالانہ عرس مبارک کی تقریبات کا آغاز ہوگیا

June 24, 2024

ایم ڈی واسا کاشان حفیظ بٹ نے کہا ہے کہ شہریوں کی شکایات کے ازالے کے لئے کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا اور اس ضمن میں کوتاہی یا غفلت برداشت نہیں کی جائے گی

ویڈیو

December 14, 2023

انیق احمد سےعراقی سفیر حامد عباس لفتہ کی ملاقات، دوطرفہ تعلقات سمیت مختلف شعبوں میں تعاون بڑھانے پر اتفاق

December 8, 2023

اسلام آباد، ورکرز ویلفیئر فنڈز کی جانب سے پریس بریفنگ کااہتمام

October 7, 2023

افتخار درانی کے وکیل کی تحریک انصاف کے رہنما کی بازیابی کے حوالے سے گفتگو

October 7, 2023

افغان وزیرخارجہ کا بلاول بھٹو نے استقبال کیا

October 7, 2023

پشاور میں سینکڑوں افراد بجلی بلوں میں اضافے پر سڑکوں پر نکل آئی

کالم

June 21, 2024

گورنر سندھ نے ایک بار پھر تاریخ رقم کردی

June 15, 2024

تحریر: سیدہ ہماء مرتضیٰ

February 3, 2024

کینسر کا عالمی دن اور ہماری ذمہ داریاں

January 25, 2024

کامیابی حاصل کرنے کےپسِ پردہ سنہرے اصول

January 7, 2024

زندگی آسان نہیں ہوتی بلکہ اسے آسان بنایا جاتا ہے